Pakistan's Urdu Forum (IT Knowledge)

For IT education (education for all)


    اگرچہ زور ہواؤں نے ڈال رکھا ہے

    Share
    avatar
    kamrankhan143
    Super Moderator

    Posts : 271
    Join date : 2010-03-17
    Age : 32
    Location : Abu Dhabi

    اگرچہ زور ہواؤں نے ڈال رکھا ہے

    Post by kamrankhan143 on Thu Apr 15, 2010 10:51 am

    اگرچہ زور ہواؤں نے ڈال رکھا ہے
    مگر چراغ نے لو کو سنبھال رکھا ہے

    محبتوں میں تو ملنا ہے یا اجڑ جانا
    مزاجِ عشق میں کب اعتدال رکھا ہے

    ہوا میں نشہ ہی نشہ فضا میں رنگ ہی رنگ
    یہ کس نے پیرہن اپنا اچھال رکھا ہے

    بھلے دنوں کا بھروسا ہی کیا رہیں نہ رہیں
    سو میں نے رشتہ غم کو بحال رکھا ہے

    ہم ایسے سادہ دلوں کو وہ دوست ہو کہ خدا
    سبھی نے وعدہ فردا پہ ٹال رکھا ہے

    حسابِ لطفِ حریفاں کیا ہے جب تو کھلا
    کہ دوستوں نے زیادہ خیال رکھا ہے

    بھری بہار میں اک شاخ پر کھلا ہے گلاب
    کہ جیسے تو نے ہتھیلی پہ گال رکھا ہے

    فراز عشق کی دنیا تو خوبصورت تھی
    یہ کس نے فتنہ ہجر و وصال رکھا ہے

      Current date/time is Sat Nov 18, 2017 1:03 am